دنیا بھر میں موبائل فون ہیکنگ کی شرح میں تاریخی اضافہ

لاہور:کورونا وبا کے دوران اسمارٹ فون کے استعمال میں بےتحاشا اضافہ ہوا۔ لیکن اس بڑھتی ہوئی شرح کا فائدہ اٹھاتے ہوئے ہیکرز کی جانب سے اسمارٹ فون ہیکنگ کی کارروائیوں میں بھی کافی تیزی آگئی ہے۔
اس بات کا انکشاف موبائل سائبرسیکیورٹی کمپنی ’ زمپریم ‘ کی حالیہ رپورٹ میں کیا گیا ہے۔ رپورٹ کے مطابق کورونا وبا کے دوران موبائل فون ہر کاروبار کا ایک اہم جز بن کر سامنے آیا۔ لیکن اس عرصے میں 214 ممالک کی 10 ملین سے زائد موبائل ڈیوائسز کو بھی ہیکنگ کا نشانہ بنایا گیا۔
رپورٹ مین کہا گیا ہے کہ 2021 میں اسمارٹ فون ہیکنگ کے لیے مال ویئر کا طریقہ بہت زیادہ مستعل رہا، اس طریقہ کار میں ہیکرز کسی سافٹ ویئر اور ایپلی کیشن کی آڑ میں صارفین کی ڈیوائس مین نقصان دہ وائرس انسٹال کردیتے ہیں جو خاموشی سے آپ کے فون سے لاگ ان تفصیلات، شناختی معلومات، کریڈٹ اور ڈیبٹ کارڈ انفارمیشن کو چرا لیتے ہیں اور 2021 میں ہیک ہونے والے اسمارٹ فون میں سے تقریبا 25 فیصد میں یہی طریقہ کار استعمال کیا گیا۔
یکم جنوری 2021 سے 31 دسمبر 2021 تک کے عرصے میں زمپریم زی لیب ٹیم نے 20 لاکھ سے زائد مال ویئر کی شناخت کی۔ یعنی ہر روز 5 ہزار سے زائد نئے موبائل وائرس نے اسمارٹ فون کا نشانہ بنایا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں