شاہ محمود قریشی کے الزامات مسترد،الیکشن کمیشن نے ثبوت مانگ لیے

پی این این نیوز: الیکشن کمیشن پنجاب نے پی ٹی آئی رہنما شاہ محمود قریشی کے الزامات مسترد کرتے ہوئے ان سے ثبوت مانگ لیے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق الیکشن کمیشن پنجاب نے پی ٹی آئی رہنما شاہ محمود قریشی کے الزامات کے جواب میں تفصیلی رپورٹ مرکزی الیکشن کمیشن میں جمع کرادی ہے۔
الیکشن کمیشن نے کہا ہے کہ پنجاب اسمبلی کے حلقہ پی پی 217 میں اسکروٹنی کے روز شاہ محمود قریشی اور ان کے وکلا نے ریٹرننگ افسر پر دباؤ ڈالنے کی کوشش کی۔ جب کہ تمام ریٹرننگ افسران قانون کے تحت ضابطہ اخلاق پر عمل یقینی بنا رہے ہیں۔
صوبائی الیکشن کمیشن نے رپورٹ میں کہا کہ پی پی217 ملتان میں ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی پر تنبیہی نوٹس جاری کیے گئے، نوٹس مخدوم زین حسین قریشی ، طاہر حسین قریشی ، محمد سلمان کو جاری کیے گئے، ڈی سی ملتان کو ترقیاتی منصوبوں پر کام روکنے کا حکم 13 جون کو جاری کیا جاچکا،ملتان میں امیدوار محمد سلمان نے 2 ترقیاتی اسکیموں کا اعلان کیا، جنہیں فوری روک دیا گیا۔
ڈسٹرکٹ مانیٹرنگ افسر کے مطابق ملتان میں بینر اور پینا فلیکس اتارنے پر شاہ محمود کے سیکرٹری نے دھمکیاں دیں،شاہ محمود نے الزام لگایا تھا کہ 20 حلقوں کے ضمنی انتخابات میں ڈپٹی کمشنرز اور ڈی پی اوز کو کہا گیا ہے کہ ان کا مستقبل انتخابی نتائج سے جڑا ہے،الیکشن کمیشن ذمے داریوں سے غافل رہا تو جمہوریت داؤ پر لگ جائے گی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں