ڈاکٹرکی مبینہ غفلت نے خاتون کی جان لے لی

لودھراں(پی این این نیوز) لودھراں کے نواحی علاقے گیلے وال میں نجی ہسپتال کے ڈاکٹرکی مبینہ غفلت نے خاتون کی جان لے لی، سوا سال پہلے دلہن بننے والی ماں بنتے ہی ایک دن کی بیٹی کو چھوڑ کر خالق حقیقی سے جاملی ،اہل علاقہ سراپا احتجاج ہیں .

گیلے وال کے رہائشی عبدالحمید غوری کا کہنا ہے کہ اس کی بیوی صائمہ نے ڈاکٹر عامر ہاشمی کے نجی ہسپتال میں پیاری سی بیٹی کو جنم دیا اور زچہ بچہ دونوں خیریت سے تھے کہ اچانک ڈاکٹر عامر نے کہا کہ خون کی بوتل لازمی لگوالیں انکار کے باوجود زبردستی پیسے لے کر خون کی بوتل خود ڈاکٹر نے منگوائی اور مریضہ کو لگا دی جس سے مریضہ کی حالت بگڑی تو ڈاکٹر نے بہاولپور ریفر کردیا ۔جہاں ڈاکٹرز نے بتایا کہ زائد المعیاد اور مضر صحت خون لگنے سے صائمہ کے گردے اور پھیپھڑے جواب دے گئے ہیں اور دیکھتے ہی دیکھتے صائمہ چل بسی ۔متوفیہ صائمہ کے اہل خانہ نے احتجاج کرتے ہوئے کہا کہ ایک دن کی بیٹی کو اب کون پالے گا اور کون ایسے قصائی مسیحاؤں کے خلاف انہیں انصاف دے گا ۔متوفیہ کے ورثاء نے ڈپٹی کمشنر لودھراں کو درخواست گزار دی ہے اور وزیراعظم پورٹل پر بھی شکایت کی ہے تاہم ابھی تک کسی قسم کی تحقیقات کے آغاز کی تصدیق نہیں ہوسکی

اپنا تبصرہ بھیجیں