PNN News

10 سالہ بچہ ٹائپنگ سپیڈ میں مشین سے بھی تیز

‌بہاولنگر(پی این این نیوز)‌بہاولنگر سے تعلق رکھنے والے دس سالہ نوجوان کی ٹائپنگ میں غیر معمولی سپیڈ اپنی جگہ سعدالرحمان آنکھوں پر پٹی باندھ کر انگلش اور اردو میں تیز ترین ٹائپنگ میں بھی کمال مہارت رکھتا ہے.

عزم و ہمت اور تسلسل کے ساتھ محنت کی جائے تو ہی کامیابی قدم چومتی ہے۔ اسی کی ایک مثال ہے بہاولنگر کی تحصیل چشتیاں کا رہائشی یہ پانچویں جماعت کا طالب علم سعدالرحمان جس کی اُردو انگلش کی ٹائپنگ سپیڈ اتنی ہے کہ ہر دیکھنے والا دنگ رہ جائے ۔سعد الرحمان آنکھوں پر پٹی باندھ کر بھی کمال کی ہے۔

عام طور پر پاکستان میں سولہویں گریڈ کے سرکاری ملازم سٹینو گرافر کی بھرتی ٹیسٹ کے لیے کم سے کم پچاس الفاظ لکھنے ہوتے ہیں مگر کمپیوٹر کے کی بورڈ پر رقص کرتی سعد کی انگلیاں اور ہاتھ ایک منٹ میں انگلش کے ایک سو ستر سے زائد الفاظ ٹائپ کرتے ہیں . سعد کی مہارت کا یہ عالم ہے کہ کسی بھی جملے یا لفظ میں غلطی کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا.

اگر اردو ٹائپنگ کی بات کی جائے تو یہ بچہ ایک منٹ میں ایک سو پانچ سے زائد الفاظ لکھ لیتا ہے. اس بچے کے ٹیلینٹ کی خاص بات آنکھوں پر پٹی باندھ کر لکھنا ہے. آنکھوں پر پٹی باندھنے سے بھی اس کی ٹائپنگ سپیڈ میں فرق نہیں پڑتا سعد الرحمن جنوبی پنجاب کے پسماندہ ترین ضلع بہاولنگر کی تحصیل چشتیاں کا رہائشی ہے.اس کے والد بھی کمپوزر ہیں.

اپنا تبصرہ بھیجیں