حکومت کا تحریک لبیک پر پابندی لگانے کا فیصلہ

اسلام آباد: وفاقی حکومت نے تحریک لبیک پاکستان (ٹی ایل پی ) پر پابندی لگانے کا فیصلہ کر لیا، وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید احمد نے کہا ہے کہ ختم نبوت کے قانون میں کوئی ترمیم نہیں کی، سڑکوں پر بد امنی پھیلانےوالوں کا قانون پیچھا کرے گا۔

اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے وفاقی وزیرِ داخلہ شیخ رشید احمد نے کہا کہ وفاقی حکومت نے تحریکِ لبیک پر پابندی عائد کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے۔انہوں نے کہا کہ ہماری ان کو منانےکی کوششیں ناکام ہوئیں، پنجاب حکومت نے تحریکِ لبیک پر پابندی لگانے کی سفارش کی ہے۔ شیخ رشید نے بتایا کہ ہم تحریکِ لبیک پر پابندی سے متعلق سمری کابینہ کو بھیج رہے ہیں، ہم قرار داد اسمبلی میں اتفاقِ رائے سے پیش کرنا چاہتے تھے۔ان کا کہناہے کہ یہ فیض آباد آنا چاہتے تھے، ہماری بڑی کوششیں تھیں لیکن وہ ہر صورت فیض آباد آنا چاہتے تھے۔

وفاقی وزیرِ داخلہ شیخ رشید نے کہا کہ جہاں تک ختمِ نبوت اور ناموسِ رسالت کا تعلق ہے شیخ رشید کی جان حاضر ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ اسلام آباد میں پولیس سے رائفل چھین کر فائرنگ کی گئی، یہ ایسا مسودہ چاہتے تھے کہ یورپ کے سارے لوگ ہی واپس چلے جائیں۔ شیخ رشید نے کہا کہ ہم نے نہیں انہوں نے حکمتِ عملی بنائی ہوئی تھی، ہم نے جو معاہدہ کیا تھا اس پر قائم تھے، جی ٹی روڈ اور موٹر وے مکمل بحال ہو چکی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں