پسند کی شادی کیس ، لاہور ہائی کورٹ کا احاطہ عدالت میدان جنگ میں تبدیل

لاہور: پسند کی شادی کرنے والے جوڑے کے اہلخانہ نے لاہور ہائیکورٹ کو میدان جنگ بنا ڈالا، لڑکے کی بہنوں نے لڑکی کے بھائیوں کی آنکھوں میں مرچیں ڈالنے کی کوشش کی ، پولیس نے ملزمان کو گرفتار کر لیا جبکہ عدالت نےلڑکی کو شوہر کے ساتھ جانے کی اجازت دے دی۔

تفصیلات کے مطابق چنیوٹ کے رہائشی مبشر نے سمیعہ خان نامی لڑکی سے پسند کی شادی کر رکھی ہے، سمیعہ کے بھائی شہزاد نے لاہور ہائیکورٹ کی جسٹس عالیہ نیلم کی عدالت میں اس کی بازیابی کیلئے درخواست دائر کر رکھی تھی۔

سمیعہ خان بیان دینےعدالت آئی توپیشی سے قبل ہی لڑکی اور لڑکے کے گھر والےآپس میں اُلجھ پڑے اور احاطہ عدالت میں کھینچا تانی کرتے رہے، اس دوران لڑکے کی بہنوں نے لڑکی کے بھائیوں کی آنکھوں میں مرچیں ڈالنے کی کوشش کی تو پولیس نے ملزمان کو پکڑ کر تھانہ انارکلی منتقل کردیا ۔عدالت نے سمیعہ خان کے بیان پر اسے شوہر کےساتھ جانے کی اجازت دے دی ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں