پنجاب حکومت کوبلدیاتی ادارے بحال کرنے کیلئے 28 جولائی تک مہلت

لاہورہائی کورٹ نے پنجاب حکومت کوبلدیاتی ادارے بحال کرنے کیلئے 28 جولائی تک مہلت دے دی۔

لاہور ہائی کورٹ کی جسٹس عائشہ اے ملک نے بلدیاتی اداروں کی عدم بحالی کیخلاف درخواستوں پرسماعت کی۔ سماعت کے دوران چیف سیکرٹری پنجاب اورسیکرٹری بلدیات عدالت میں پیش ہوئے۔سماعت کے دوران وکیل درخواست گزار نے عدالت کو بتایا کہ سپریم کورٹ نے بلدیاتی اداروں کو بحال کرنے کا حکم دیا مگر تاحال ادارے بحال نہیں ہوسکے۔

جسٹس عائشہ اے ملک نے چیف سیکرٹری سے استفسار کیا کہ بلدیاتی ادارے کیوں بحال نہیں کیے؟، جس پر چیف سیکرٹر ی نے جواب دیا کہ بلدیاتی اداروں کی بحالی سے متعلق کمیٹی تشکیل دےدی ہے،عدالت کی جانب سے سوال کیا گیا کہ کمیٹی نے کیا کرناہے اورکب کام شروع کریگی؟، جس پر چیف سیکرٹری نے کہا کہ کمیٹی عیدکے بعدکام شروع کریگی۔

جسٹس عائشہ اے ملک نے ریمارکس دیئے کہ بلدیا تی ادارے بحال کرنے کا حکم سپریم کورٹ کاہے،پنجاب حکومت کوعمل کرناہوگا،پنجاب حکومت نیاجواب جمع کرائے۔ عدالت کی جانب سے نیا پلان پیش کرنے تک حکومت کے ڈویلپمنٹ پلان پر عمل معطل کرتے ہوئے اگلی سماعت پر چیف سیکریٹری اور سیکریٹری لوکل گورنمنٹ کو پیش ہونے کی ہدایت کردی گئی۔

بعد ازاں لاہور ہائی کو رٹ نے پنجاب حکومت کوبلدیاتی ادارے بحال کرنے کیلئے مہلت دیتے ہوئے کیس کی مزید سماعت 28جولائی تک ملتوی کردی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں